بشریٰ بی بی کے سابق شوہر میاں خاور مانیکا وٹو نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور ان کی اہلیہ بشرٰی بی بی عرف پنکی پیرنی کے خلاف اسلام آباد میں درخواست دائر کردی

اسلام آباد: بشریٰ بی بی کے سابق شوہر میاں خاور مانیکا وٹو نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور ان کی اہلیہ بشرٰی بی بی عرف پنکی پیرنی کے خلاف اسلام آباد میں درخواست دائر کردی۔
خاور مانیکا نے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹس اسلام آباد میں اپنی درخواست دائر کی جس میں بطور گواہ مفتی سعید، عون چوہدری اور محمد لطیف کے نام گواہوں کو طور پر درخواست میں درج ہیں۔
بشریٰ بی بی کے سابق شوہر نے اپنا بیان سول جج کی عدالت میں ریکارڈ کرایا اور درخواست میں مؤقف اختیار کیا ہےکہ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے بشریٰ بی بی سے غیرشرعی نکاح کیا، انہوں نے دوران عدت نکاح کرکے گناہ کیا اور یہ فراڈ پر مبنی شادی کی گئی ہے
درخواست میںمزید کہا گیا ہےکہ بشریٰ بی بی سے میری شادی 1989 میں شادی ہوئی تھی، ہماری شادی شدہ زندگی پر سکون گزر رہی تھی لیکن عمران خان نے اس میں مداخلت کی، پیری مریدی کے چکروں میں عمران خان بشریٰ بی بی کے گھر داخل ہوئے تھے اور ان کامیری سابقہ بیوہ کے ساتھ معاشقہ شروع ہو گیا ۔
خاورمانیکا نے اپنے اور سابقہ بیوی بشریٰ بی بی کے نکاح نامہ کی کاپی درخواست کے ساتھ جمع کرائی اور طلاق نامہ بھی درخواست کے ساتھ منسلک کیا جب کہ مفتی سعید، عون چوہدری اور محمد لطیف کے نام بطور گواہ درخواست میں درج ہیں، گواہان کے بیانات آئندہ سماعت پر ریکارڈ کیے جائیں گے۔
اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹس خاورمانیکا کی درخواست پر 28 نومبر کو سماعت کرے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button